براؤزنگ زمرہ

ذرائع ابلاغ

فیس بک ایونٹس اور گوگل کلینڈر کو منسلک کریں

اگر آپ کاروباری و نجی ملاقاتوں، پروگرامات اور دیگر اہم سرگرمیوں کی تاریخ اور اوقات یاد رکھنے کے لیے گوگل کلینڈر کا استعمال کرتے ہیں اور فیس بک ایونٹس پر بھی مختلف پروگرامات کے ساتھ یہ سلسلہ رہتا ہے تو بہتر رہے گا کہ آپ دو الگ کلینڈر دیکھنے…

فیس بک پر 4 چیزوں سے اجتناب کریں

فیس بک اس وقت نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں سماجی رابطوں (social networking) کے لیے سب سے بڑی ویب سائٹ مانی جاتی ہے۔ یہ ایک ایسی محفل ہے جہاں آپ کو اپنے ہی جیسے دسیوں لوگ ملیں گے۔ جس طرح ہر محفل میں آمد، شمولیت، ملاقات اور برخاست وغیرہ…

کیا بلاگ اور سوشل میڈیا میں فرق ہے؟

گزشتہ دنوں ایک عجیب سوال سے پالا پڑا کہ کیا بلاگ اور سوشل میڈیا میں فرق ہے؟ اس سوال پر حیرت ہوئی کہ لوگ سوشل نیٹ ورکس (فیس بک، ٹویٹر وغیرہ) کی مقبولیت کے باعث سوشل میڈیا کے حقیقی معنی بھول چکے ہیں یا خلط ملط کر چکے ہیں۔ اس حوالے سے اپنی…

اردو سوشل میڈیا سمٹ کا کامیاب انعقاد

ملیر کے ایک ہوٹل میں صبح کا ناشتہ کرتے اردو بلاگرز کے دماغ میں جو خیال آیا وہ بعد میں اتنا مشکل اور بھاری ثابت ہوگا میں نے سوچا بھی نہ تھا۔ اس وقت تو اردو کی محبت اور جذبات میں آ کر خوب وعدے اور دعوے کرلیے لیکن بعد میں جو معاملات پیش آئے وہ…

کیا گوگل انڈیا کا اشتہار پاکستانی فلم کی نقل ہے؟

گوگل انڈیا نے بھارت میں ادارے کی تشہیر کے لیے ایک عدد اشتہار Reunion بنایا ہے کہ جس میں گوگل سرچ کی سہولیات مثلاً موسم کا حال جاننے، پروازوں کا شیڈول معلوم کرنے کا طریقہ اور گوگل پلس وغیرہ کی افادیت کو بہت اچھے انداز میں پیش کیا گیا ہے۔ اس…

سوشل میڈیا پر سیاسی نفرت انگیزی

حج کے دوران وادی منی میں تین شیطانوں کو کنکریاں ماری جاتی ہیں۔ اس عمل کو رمی کہتے ہیں کہ جو 10، 11 اور 12 ذی الحجہ کو ادا کیا جاتا ہے۔ عازمین حج کی جانب سے شیطان کو ماری جانے والی کنکریوں کا حجم چنے کے برابر ہونا کافی ہے۔ لیکن چونکہ لفظ…

سقوط ڈھاکہ اور ذرائع ابلاغ (۲)

(گزشتہ سے پیوستہ) ذرائع ابلاغ کا کام نہ صرف عوام کو حالات و واقعات سے باخر رکھنا ہوتا ہے بلکہ انہیں درست راستے کے انتخاب میں رہنمائی فراہم کرنا بھی ہوتا ہے۔ لیکن جنرل محمد ایوب خان کے آمرانہ دور میں کٹھن حالات گزارنے کے بعد ملنے والی آزادی…

سقوط ڈھاکہ اور ذرائع ابلاغ (۱)

سقوط ڈھاکہ پاکستان کی تاریخ کا اتنا بڑا اور عظیم سانحہ ہے کہ جس کی ذمہ داری کسی خاص فرد یا شعبے سے وابستہ افراد پر ڈالنا قطعاً ممکن نہیں۔ عام طور پر مشرقی پاکستان کی مغربی پاکستان سے علیحدگی کا تمام تر ملبہ سیاستدانوں اور فوج کے اوپر ڈال…

کھلاڑیوں کو بھی جینے دو!

جنابِ جیم! ہم سب بخوبی جانتے ہیں کہ ہمارا ملک لاتعداد مسائل کا شکار ہے۔ ایسے میں ایک ہی تفریح ہمیں 'کرکٹ' کی صورت میں میسر تھی۔ جب ہماری ٹیم جیتتی تو ہم تمام پریشانیوں کو ایک طرف رکھ کر خوب خوشیاں مناتے۔ لیکن پچھلے کئی دنوں سے ہم سب افسوس…

اصلی نقلی

سات سمندر پار کے اخبار نے ایک ویڈیو جاری کی، جسے ہمارے ملک کے پڑھے لکھے اور باشعور دنیا کے میڈیا نے بھی اچک لیا. ٹیلیویژن چینلز پر پٹیاں جگ مگ کرنے لگیں اور ریڈیو پر دل دوز چیخوں والے پرومو نشر ہونے لگے. جید مصنفین نے مذمت کے لیے قلم تھام…