براؤزنگ زمرہ

سیاست

مصطفی کمال کی بغاوت: ‘بھائی’ کو فرق تو پڑے گا!

گزشتہ روز کراچی کے سابق ناظم سید مصطفیٰ کمال اپنے آبائی شہر لوٹ آئے۔ کراچی آتے ہی انہوں نے جو کام کیا وہ کسی کے وہم و گمان میں بھی نہ تھا۔ حتی کہ متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے عہدیداران بھی اپنے سابق سینیٹر کی آمد اور مقاصد سے لاعلم…

آن لائن پول کے نتائج تبدیل؛ ایم کیو ایم کی منفرد دھاندلی

گزشتہ دنوں امریکا کے شہر ڈیلاس میں متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کی امریکی شاخ کا انیسواں یوم تاسیس منایا گیا۔ اس حوالے سے منعقدہ تقریب میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین نے اپنے مخصوص روایتی انداز میں تقریر کی جس میں مظلومت کے اظہار سے…

نہیں بھائی نہیں!

کہتے ہیں کسی زمانے میں ایک شخص نے اپنی زندگی سے پریشان ہو کر خودکشی کا ارادہ کیا۔ اس ارادے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے وہ گھر سے روانہ ہوا تو کچھ پھل اور سبزیاں وغیرہ بھی ساتھ لے لیے۔ رستے میں ایک دوست ملا اور حال چال دریافت کیا تو جواب میں…

آپ لیگی ہیں یا انصافی؟

میں اپنے دوست کے ہمراہ برشلونہ کے ہوائی اڈے سے باہر نکلا تو ہماری پہلی تلاش ایسا ہوٹل تھا کہ جہاں قیام کے ساتھ طعام کا بھی بندوبست ہو۔ اس بابت دریافت کرنے کے لیے ایک کاؤنٹر کا رخ کیا تو راستے میں ایک پاکستانی نوجوان نظر آیا۔ غیر ملک اور…

جمہوریت کا ریپ

"ہاہاہا۔۔۔ ہاہاہا۔۔۔" وہ قہقہے پر قہقہے لگائے جا رہا تھا اور میں تھا کہ جیسے منہ میں زبان ہی نہ ہو۔ دل تو چاہ رہا تھا اسے گلا دبا کر خاموش کردوں لیکن اس وقت ٹی وی اسکرین پر جلتی بجھتی لال پٹیاں زیادہ اہم تھیں کہ جس میں وزیراعظم نواز شریف کی…

الیکشن 2013ء اور پتنگ باز سجنا

ممکن ہے الیکشن کمیشن آف پاکستان پورے ملک میں الیکشن 2013ء کو صاف و شفاف کروانے میں کامیاب ہوگیا ہو لیکن 11 مئی کو کراچی کی عوام نے جو کچھ اپنی آنکھوں سے دیکھا اور کانوں سے سنا، اس کے بعد الیکشن کمیشن کی کسی بات پر یقین کرنا ممکن نہیں رہا۔…

سوشل میڈیا پر سیاسی نفرت انگیزی

حج کے دوران وادی منی میں تین شیطانوں کو کنکریاں ماری جاتی ہیں۔ اس عمل کو رمی کہتے ہیں کہ جو 10، 11 اور 12 ذی الحجہ کو ادا کیا جاتا ہے۔ عازمین حج کی جانب سے شیطان کو ماری جانے والی کنکریوں کا حجم چنے کے برابر ہونا کافی ہے۔ لیکن چونکہ لفظ…

ہم کس گلی جا رہے ہیں؟

ایک وقت تھا کہ جب ہم اپنے بڑے بوڑھوں سے کراچی میں ہونے واقعات کے بارے میں سنا کرتے تھے کہ یہاں کے باسیوں نے کئی ایسے واقعات کو  اپنی جاگتی آنکھوں سے دیکھا اور کڑے وقتوں کو برداشت کیا ہے کہ جن کا آج کی نسل تصور بھی نہیں کرسکتی۔ ان میں فرقہ…

رائے دو آئسکریم لو!

"ارے اوو ببوا" "کا بات ہے رے منوا" "ارے تمے کا بتائیں، کل ہم جیسے اپنے گھر سے باہر نکلے ہیں تو کا دیکھتے ہیں کہ ہمارے بگل والے گھر کے سامنے ایک تمبو ومبو لگا ہے، تو ہم چلے گئے واں پتہ وتہ کرنے کہ ماملہ کا ہے، تمبو کاہے کو لگا ہے؟" "تو کا…

سقوط ڈھاکہ اور ذرائع ابلاغ (۲)

(گزشتہ سے پیوستہ) ذرائع ابلاغ کا کام نہ صرف عوام کو حالات و واقعات سے باخر رکھنا ہوتا ہے بلکہ انہیں درست راستے کے انتخاب میں رہنمائی فراہم کرنا بھی ہوتا ہے۔ لیکن جنرل محمد ایوب خان کے آمرانہ دور میں کٹھن حالات گزارنے کے بعد ملنے والی آزادی…